کورونا وائرس؛ تفتان بارڈر سے 289 زائرین سکھر منتقل

سکھر: کرونا وائرس کے باعث بلوچستان کے علاقے تفتان میں رکھے گئے 289 زائرین کو سکھر منتقل کردیا گیا ہے۔

تفتان بارڈر سے زائرین کو لے کر دوبسیں سکھر کی لیبر کالونی پہنچیں جن میں مرد، خواتین اور بچے سوار تھے۔ انتظامیہ نے زائرین کو لیبر کالونی میں قائم آئسولیشن یونٹ منتقل کیا ہے جہاں انہیں 14 روز کے لیے قرنطینہ میں رکھا جائے گا اور اسکریننگ بھی کی جائے گی۔

ادھر کراچی میں وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی زیر صدارت کورونا وائرس سے متعلق اجلاس ہوا۔وزیراعلیٰ سندھ نےکمشنر سکھر کو ہدایت کی کہ تمام آنے والے زائرین کے ٹیسٹس شروع کردیں، ابھی 289 زائرین پہنچے ہیں اور مزید 853 آرہے ہیں، میں نے صحت کی خصوصی ٹیمیں بھی سکھر بھیجی ہیں۔

دوسری جانب ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ کراچی میں 120بستروں اور 16وینٹی لیٹرز پر مشتمل اسپتال کو کورونا کے مریضوں کیلئے مختص کردیا، تاہم اسپتال کا محلِ وقوع اسٹریٹجک مقاصد کے لیے ظاہر نہیں کیا جارہا۔

وزیراعلیٰ سندھ نے شادیاں، میلے، درگاہیں، شادی ہالز اور مدارس بند کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے وزراء کو بھی تقریبات میں جانے سے روک دیا۔ انہوں نے کہا کہ اگر کہیں بھی لاک ڈاؤن کی صورتحال ہو تو شہریوں تک غذا، ادویات اور ڈاکٹرز کی رسائی کا پلان یقینی بنایا جائے۔